اسرائیل کے وزیر اعظم کا خفیہ دورہ سعودی عرب، ولی عہد سے ملاقات : اسرائیلی میڈیا اور وزیر کی تصدیق، سعودی وزیر خارجہ کی تردید

0

ریاض :   اسرائیلی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو نے موساد کے سربراہ کے ہمراہ اتوار کو خفیہ طور پر سعودی عرب کا دورہ کیا، جہاں انہوں نے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان اور امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو سے ملاقات کی، اسرائیلی وزیر اورمیڈیا نے دورے کی تصدیق جبکہ سعودی وزیر خارجہ نے تردید کر دی۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز اسرائیلی صحافی باراک راوید نے اپنے ٹویٹ میں ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ نیتن یاہو پرائیویٹ طیارے میں اتوار کی شام خفیہ طور پرسعودی شہر نیوم گئے جہاں انہوں نے ولی عہد محمد بن سلمان اور امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیوسے ملاقات کی، موساد کے سربراہ یوسی کوہِن بھی ان کے ہمراہ تھے ، ملاقات کے دوران دوطرفہ سفارتی تعلقات اور ایران سے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا، صحافی کا کہناتھا کہ اسرائیلی وفد پانچ گھنٹے سعودی عرب میں گزارنے کے بعدآدھی رات کو واپس اسرائیل پہنچا، ادھرفلائٹ ٹریکنگ ڈیٹا کے مطابق اسرائیلی وزیراعظم کے زیراستعمال ایک طیارے نے شام پانچ بجے اتل ابیب کے بن گوریان ایئرپورٹ سے بحیرہ احمر کے سعودی ساحلی شہرکیلئے اڑان بھری اور پانچ گھنٹے بعد واپس اسرائیل کیلئے ٹیک آف کیا، تاہم اتوارکی رات ہونیوالے ان مذاکرات کی سعودی عرب یا اسرائیلی حکام نے ابھی تک باضابطہ تصدیق نہیں کی،ادھر سعودی وزیر خارجہ نے نیتن یاہو کے دورہ سعودی عرب کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ ولی عہدمحمد بن سلمان اور اسرائیلی حکام کے درمیان ملاقات کی خبریں بے بنیاد ہیں، اپنے ٹویٹ میں انہوں نے کہا کہ ملاقات میں صرف سعودی اور امریکی حکام موجود تھے ، اسرائیلی وزیراعظم نے بھی اس معاملے پر تبصرے سے گریز کیا ہے ، گزشتہ روز ایک تقریب میں شرکت کے بعد نیتن یاہو سے جب دورہ سعودی عرب سے متعلق سوال کیا گیا تو انہوں نے کہاکہ میں نے اپنے پورے دوراقتدار میں ایسی خبروں پر کبھی تبصرہ نہیں کیا اور آئندہ بھی ایسا ہی کروں گا، دوسری جانب اسرائیل کے وزیر تعلیم اور سرکاری میڈیا نے نیتن یاہو کے دورہ سعودی عرب کی تصدیق کی ہے ، اسرائیلی وزیر تعلیم یوایو گلانٹ کا فوجی ریڈیو سے گفتگو میں کہنا تھا کہ ملاقات ناقابل یقین کامیابی ہے جس پر نیتن یاہو کو مبارکباد پیش کرتا ہوں، یہ بہت اہم ہے ، ہمارے باپ دادا کا خواب پورا ہوگیا، اسرائیلی وزیر دفاع بینی گانتز کا ردعمل میں کہنا تھا کہ نیتن یاہوکے طیارے کی خفیہ پرواز کولیک کرنا غیر ذمہ دارانہ حرکت ہے ، ادھر واشنگٹن پوسٹ کا کہنا ہے کہ امریکی وزیرخارجہ کی موجودگی میں نیتن یاہو کے دورہ سعودی عرب کا مقصد ایران پر ممکنہ حملہ ہوسکتا ہے ۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.