کسٹم خود کو بارڈر تک محدود رکھے،شہریوں اور قومی شاہراہوں پر چیکینگ بند کی جائے : میر عبدالقدوس بزنجو

0

کوئٹہ : وزیراعلیٰ بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو نے کہا ہے گوادر پاکستان کا مستقبل ہے 2018 میں بھی وزیراعلیٰ کی حثیت سے گوادر کی ترقی پر توجہ مرکوز رکھی اور اب بھی گوادر کی ترقی اولین ترجیح ہے گوادر کے عوام پر امن رہیں اور دھرنوں اور احتجاجی سیاست کا حصہ نہ بنیں ایسے منفی رویوں سے سرمایہ کار گوادر سے چلے جائیں گے اور سب سے زیادہ نقصان گوادر اور یہاں کے عوام کو پہنچے گا ان خیالات کا اظہار انہوں نے گوادر کے ایک نمائندہ وفد سے بات چیت کرتے ہوئےکیا صوبائی وزراءسید احسان شاہ عبدالرشید بلوچ اور رکن صوبائی اسمبلی میر حمل کلمتی بھی اس موقع پر موجود تھے وزیرا علیٰ نے کہا کہ گوادر کے غریب ماہی گیروں کے روزگار کے تحفظ کو یقینی بنایا گیا ہے اس کے ساتھ ساتھ سرحدی علاقوں کے عوام کے زریعہ معاش کو بھی بحال کیا گیا ہے تاکہ لوگوں کے گھروں کے چولہے روشن رہیں وزیراعلیٰ نے کہا کہ جب تک سرحدی علاقوں کے لوگوں کو مناسب روزگار مہیا نہیں کیا جاتا بارڈر ٹریڈ سے منسلک انکا زریعہ معاش بحال رہے گا انہوں نے کہا لوگوں کے روزگار کے تحفظ اور انکی آزادانہ نقل وحمل کے لئے شاہراہوں پر قائم غیر ضروری چیک پوسٹوں کو ختم کر دیا گیا ہے وزیراعلیٰ نے کہا کہ کسٹم سے بھی کہا گیا ہے کہ خود کو بارڈر تک محدود رکھیں اور شہروں کے اندر اور شاہراہوں پر قائم غیر ضروری چیک پوسٹوں اور چیکنگ کو ختم کیا جائے کیونکہ یہ کسٹم کا مینڈیٹ نہیں بلکہ پولیس کے دائیرہ اختیار میں ہے وزیراعلیٰ نے کہا کہ تاریخ میں پہلی مرتبہ بلوچستان کے سمندری حدود میں غیر قانونی ٹرالنگ صفر ہو چکی ہے اور انہوں نے وزیراعلیٰ سندھ سے ملاقات میں بھی یہ مسلئہ اٹھایا تھا جس پر سید مراد علی شاہ نے سندھ کے ٹرالروں کی بلوچستان کے حد ود میں جانے پر پابندی لگانے کی یقین دہانی کرائی ہے وزیراعلیٰ نے کہا کہ پسنی فش ہاربر کی مکمل بحالی بھی ہماری ترجیحات میں شامل ہے جسکے لئے ڈیڑھ ارب روپے کی کنسلٹنسی کی منظوری دی گئی ہے جو ٹینڈرنگ پراسس میں ہے وزیراعلیٰ نے مزید کہا کہ ہماری حکومت نے گوادر کے پانی کا دیرینہ مسئلہ دیرپا بنیادوں پر حل کیا ہے وفد نے گوادر کی ترقی کو خصوصی اہمیت دینے پر وزیراعلیٰ کا شکریہ ادا کیا۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.