وزیراعلیٰ بلوچستان کی میل و فیمیل اساتذہ کی مستقل بنیادوں پرترقی کی منظوری

0

کوئٹہ : وزیراعلیٰ بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو نے صوبائی سیلیکشن بورڈ کی سفارش پر ہائر اور سیکنڈری ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کے میل اور فیمیل سیکشن اسٹنٹ پروفیسرز، ایڈیشنل ڈائریکٹر اوراساتذہ کی مستقل بنیادوں پر ترقی کی منظوری دے دی۔ ترقی پانے والوں میں ہائر ایجوکیشن(میل سیکشن)کے 40اسٹنٹ پروفیسرز کو (گریڈ 18)سے ایسوسی ایٹ پروفیسر، پرنسپل انٹرمیڈیٹ کالجز اور جوائنٹ ڈائریکٹر(گریڈ 19)کے عہدوں پر مستقل بنیادوں پر ترقی دیدی گئی ہے۔ سیکنڈری ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ(میل سیکشن)کے ایک ایڈیشنل ڈائریکٹر(گریڈ 19)کو ڈائریکٹر (گریڈ20)میں مستقل بنیاد پر ترقی دے دی گئی۔ سیکنڈری ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ(فیمیل سیکشن)کے 347ایس ایس ٹی (جنرل، سائنس، ٹیکنیکل)(گریڈ17)11سینئر فزیکل ٹیچرز (گریڈ 17)6سینئر ڈرائنگ مسٹریس (گریڈ 17)2سینئر عربی ٹیچرز کو ہیڈ مسٹریس(گریڈ 17)کے عہدوں پر مستقل بنیادوں پر ترقی دے دی گئی۔ سیکنڈری ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ(فیمیل سیکشن)کے 163ایس ایس ٹی (جنرل، سائنس، ٹیکنیکل)(گریڈ 17)کو سبجیکٹ سپیشلسٹ(گریڈ 17)کے عہدے پر مستقل بنیادوں پر ترقی دے دی گئی۔ سیکنڈری ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ(میل سیکشن)کے 470ایس ایس ٹی (جنرل، سائنس، ٹیکنیکل)(گریڈ 17)15سینیر فزیکل ایجوکیشن ٹیچرز (گریڈ 17)14سینئر ڈرائنگ ماسٹر(گریڈ 17)14سینئر عربی ٹیچرز کو ہیڈ ماسٹر(گریڈ 17)کے عہدے پر مستقل بنیادوں پر ترقی دے دی گئی۔ سیکنڈری ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ (میل سیکشن)کے 258ایس ایس ٹی(جنرل، سائنس، ٹیکنیکل)(گریڈ 17)کو سبجیکٹ سپیشلسٹ (گریڈ 17)کے عہدے پر مستقل بنیادوں پر ترقی دے دی گئی۔ واضح رہے سلیکشن بورڈ کی سفارشات پر مشتمل سمری گزشتہ روز ہی وزیراعلء سیکریٹریٹ کو موصول ہوئی تھی جسکی منظوری بھی اسی دن دے دی گئی اس سے قبل سلیکشن بورڈ کی سفارشات کی منظوری میں مہینوں کی تاخیر ہو جاتی تھی اور سمری کئی مرتبہ مختلف اعتراضات لگا کر واپس کر دی جاتی تھی اس دوران کئی افسر اپنے مقررہ وقت کے دوران ترقی نہ ملنے پر ریٹائیر بھی ہوگیئے تاہم وزیر اعلی بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو کا واضع موقف ہے کہ ترقی افسران اور اہلکاروں کا حق ہے جو انہیں بروقت ملنا چاہیئے وزیراعلء نے اس قبل بھی صوبائی سلیکشن بورڈ کی سفارش پر سول سیکرٹریٹ اور مختلف محکموں کے افسران کے گزشتہ دور میں غیر ضروری تاخیر کے شکار پروموشن کیسیز کی فوری منظوری دی تھی جس کو افسران اور ملازمین کی جانب سے سراہا گیا تھا۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.